پاکستانی روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر میں ہوشربا اضافہ

  • جمعہ 13 / مئ / 2022

انٹربینک مارکیٹ میں جمعہ کی صبح امریکی ڈالر کی قدر 193 روپے سے زیادہ ہو کر نئی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی۔ گزشتہ روز 192 روپے کی بلند سطح پر پہنچنے سمیت تمام ریکارڈ بھی توڑے ہیں۔

فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کے مطابق دن کے آغاز میں ڈالر کی قدر میں 1 روپے 20 پیسے کا اضافہ ہوا جس کے بعد گزشتہ روز 192 روپے پر بند ہونے کے بعد ڈالر آج صبح 11:00 بجے کے قریب 193روپے 10 پیسے کا ہوگیا۔

پاکستانی روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قدر میں مسلسل چار دن سے تاریخی اضافہ جاری ہے۔ غیر ملکی کرنسی منگل کو انٹربینک مارکیٹ میں 188 روپے 66 پیسے کی ہونے کے بعد بدھ کو بڑھ کر190 روپے 90 پیسے کی ہو گئی جبکہ جمعرات کو ڈالر کی قدر 192 روپے کی ہو گئی تھی۔ الفا بیٹا کور کے چیف ایگزیکٹو خرم شہزاد نے کہا کہ ڈالر کی قدر میں آج مزید اضافے کا امکان ہے۔

اس دوران بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جانب سے اپریل کے مہینے میں 3.1 ارب ڈالر کی رقم پاکستان بھیجی گئی جو کسی ایک مہینے میں بھیجی جانے والی رقم کا ریکارڈ ہے۔ اپریل میں بھیجی جانے والی ترسیلات زر گزشتہ سال اپریل کے مہینے کے مقابلے میں تقریباً 12 فیصد زیادہ ہیں۔

موجودہ مالی سال کے پہلے دس ماہ میں بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی جانب سے پاکستان بھیجی جانے والی رقم کا مجموعی حجم 26.1 ارب ڈالر تھی جو گزشتہ سال کے انہی مہینوں کے مقابلے میں 7.6 فیصد زیادہ ہے۔ سٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق سب سے زیادہ رقم سعودی عرب، متحدہ عرب امارات، برطانیہ اور امریکہ میں بسنے والے پاکستانیوں کی جانب سے بھجوائی گئی۔

تجزیہ کاروں کے مطابق ترسیلات زر میں اضافہ خوش آئند ہے جس نے کسی حد تک ڈالر کے مقابلے میں پاکستانی روپے کو سہارا دیا ورنہ روپے کی سطح اور زیادہ کم ہوتی۔

loading...