شیخ محمد بن زاید النہیان متحدہ عرب امارات کے صدر منتخب ہوگئے

  • ہفتہ 14 / مئ / 2022

شیخ محمد بن زاید النہیان متحدہ عرب امارات کے صدر منتخب ہوگئے ہیں۔ سرکاری میڈیا کے مطابق سابق رہنما شیخ خلیفہ کے انتقال کے بعد انہیں نیا صدر چنا گیا ہے۔

سرکاری خبر رساں ادارے ’وام نیوز‘ کے مطابق شیخ محمد کو وفاقی سپریم کونسل نے منتخب کیا ہے۔ وہ اب تیل پر انحصار کرنے والی معیشت کے رہنما ہوں گے جو ان کے والد نے 1971 میں قائم کی تھی۔ ایم بی زیڈ کے نام سے جانے جانے والے شیخ محمد نے وفاقی سپریم کونسل سے ملاقات بھی کی۔ ایم بی زیڈ، یو اے ای کے ساتویں رہنما ہیں۔  ان کے سوتیلے بھائی شیخ خلیفہ کے انتقال پر متحدہ عرب امارات میں چالیس دن سوگ کا اعلان کیا گیا ہے۔

متحدہ عرب امارات کے صدر اور ابوظبی کے حکمراں شیخ خلیفہ بن زاید النہیان گزشتہ روز انتقال کر گئے تھے۔ شیخ خلیفہ بن زاید النہیان 3 نومبر 2004 سے متحدہ عرب امارات کے صدر اور ابوظبی کے حکمراں کے طور پر فرائض انجام دے رہے تھے۔ وہ اپنے والد مرحوم شیخ زاید بن سلطان النہیان کے جانشین منتخب ہوئے تھے جنہوں نے 1971 میں یونین کے بعد متحدہ عرب امارات کے پہلے صدر کے طور پر خدمات انجام دیں۔ ان کا انتقال 2 نومبر 2004 میں ہوا۔

شیخ خلیفہ، متحدہ عرب امارات کے دوسرے صدر اور امارات ابوظبی کے 16ویں حکمران تھے۔ وہ شیخ زاید کے بڑے بیٹے تھے۔ متحدہ عرب امارات کا صدر بننے کے بعد شیخ خلیفہ نے وفاقی حکومت اور ابوظبی دونوں کی تنظیم نو کی۔ ان کے دور حکومت میں متحدہ عرب امارات نے تیزی سے ترقی کی اور یو اے ای کو اپنا گھر کہنے والے لوگوں کے لیے باوقار زندگی کو یقینی بنایا۔

شیخ خلیفہ نے تیل اور گیس کے شعبے اور چھوٹی صنعتوں کی ترقی کو آگے بڑھایا جنہوں نے ملک کے معاشی تنوع میں کامیابی کے ساتھ تعاون کیا۔ انہوں نے امارات کی فلاح و بہبود کے لیے پورے متحدہ عرب امارات میں وسیع دورے کیے، اس دوران انہوں نے ہاؤسنگ، تعلیم اور سماجی خدمات سے متعلق متعدد منصوبوں کی تعمیر کے لیے ہدایات دیں۔ شیخ خلیفہ عوامی معاملات میں اپنی گہری دلچسپی رکھنے کے لیے جانے جاتے تھے۔

وزیر اعظم پاکستان شہباز شریف نے متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ خلیفہ بن زاید النہیان کے انتقال پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے۔ ایک  ٹوئٹ بیان  میں ان کا کہنا تھا کہ ’متحدہ عرب امارات نے ایک دور اندیش رہنما اور پاکستان ایک عظیم دوست سے محروم ہو گیا ہے‘۔

loading...