تحریک انصاف نے لانگ مارچ کے تحفظ کے لئے اسلام آباد ہائی کورٹ سے مدد مانگ لی

  • سوموار 23 / مئ / 2022

تحریکِ انصاف نے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی گئی ہے جس میں حکومت کہ طرف سے تحریکِ انصاف کے 25 مئی کو ہونے والے لانگ مارچ کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کرنے سے روکنے کی استدعا کی گئی ہے۔

تحریک انصاف کئ سیکریٹری اسد عمر نے یہ اطلاع ایک  ٹوئٹر پیغام میں دی ہے۔ اسد عمر کا کہنا تھا کہ یہ درخواست آئینِ پاکستان کے آرٹیکل 199 کی بنیاد پر دائر کی گئی ہے اور اس میں کہا گیا ہے کہ جمع ہو کر پرامن طریقے سے اجتجاج کرنا تمام پاکستانی شہریوں کا حق ہے اور عدالت حکومت کو اس حق کی ادائیگی سے روکنے سے باز رکھے۔

پاکستان تحریک انصاف نے سری نگر ہائی وے پر 25 مئی کو جلسہ اور دھرنا دینے سے متعلق اسلام آباد کی انتظامیہ کو درخواست دے دی ہے۔ درخواست میں کہا گیا ہے کہ پی ٹی آئی پُرامن مارچ اور دھرنا دینا چاہتی ہے، اس لیے انہیں سیکیورٹی اور دیگر انتظامات کی اجازت دی جائے۔ ڈپٹی کمشنر کو دی جانے والی درخواست میں کہا گیا ہے کہ ایچ نائن اور جی نائن کے درمیان والی جگہ فراہم کی جائے۔ خیال رہے کہ جمعیت علمائے اسلام ف نے بھی اس جگہ پر دھرنا دیا تھا۔ تحریک انصاف کے اسلام آباد کی طرف لانگ مارچ کی قیادت عمران خان کریں گے۔

سابق وزیر اعظم عمران خان پاکستان تحریک انصاف کے لانگ مارچ کی قیادت پشاور سے کریں گے اور اس ریلی میں صوبے کے دیگر اضلاع سے آنے والے جلوس شریک ہوں گے۔ پی ٹی آئی کے رہنما اور صوبائی وزیر عاطف خان نے بی بی سی کو بتایا کہ تمام اضلاع کے قائدین نے آج اپنے اپنے شہروں میں اجلاس طلب کیے ہیں، جس میں 25 مئی کے لانگ مارچ کے بارے میں فیصلے کیے جائیں گے۔

اگر حکومت کی جانب سے سخت رد عمل اور گرفتاریاں کی جاتی ہیں تو ہو سکتا ہے کہ عمران خان کی نقل و حرکت کو خفیہ رکھا جائے اور وہ عین وقت پر اسلام آباد میں ریلی میں شامل ہوں۔

loading...