ہمیں کہا جارہا ہے چوروں کے ساتھ کھڑے نہ ہوئے تو جیلوں میں ڈالا جائے گا: عمران خان

  • بدھ 06 / جولائی / 2022

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین اور سابق وزیراعظم عمران خان نے دعویٰ کیا ہے کہ انہیں کہا جارہا ہے کہ چوروں کے ساتھ کھڑے نہ ہوئے تو مقدمات دائر ہوں گے اور جیلوں میں ڈالا جائے گا۔

ساہیوال میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ جب سے سازش کے تحت امریکا کے غلام آئے ہیں، ایک بیرونی سازش کے تحت ہمارے اوپر مسلط کیے گئے ہیں اور انہوں نے آتے ہی مہنگائی آسمان پر پہنچا دی اور پیٹرول، ڈیزل، گیس اور بجلی مہنگی کردی۔ ہماری معیشت کو دو مہینوں کے اندر نیچے گرائی جو مشکلوں سے پچھلے دو سال میں بہتر کی تھی۔ پاکستان کی اکنامک سروے بھی کہتا ہے دو سال میں 17 فیصد ترقی ہوئی، ریکارڈ برآمدات کی اور ریکارڈ ترسیلات زر ہوئیں۔

سابق وزیراعظم نے کہا کہ لوٹوں کو شکست دینی ہے، یہ جتنی بھی دھاندلی کریں، الیکشن کمیشن بے ضمیر اور وہ الیکشن کمیشن جو ان کے ساتھ مل کر ان چوروں اور لوٹوں کو جتانے کی کوشش کر رہا ہے۔ اس کے باوجود امپائر بھی ملالو تم نہیں جیت سکتے۔

وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز پر شدید تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ تم امپائروں کے ساتھ ملا کر یہ میچ جیتو گے تمہیں میرا چیلنج ہے کہ اس کے باوجود ہم تمہیں الیکشن ہرائیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ پولنگ کے دن کے لیے مجھے ہر پولنگ اسٹیشن پر 10 نوجوان چاہیے جو دھاندلی نہ کروانے دیں گے۔ 17 جولائی کو نتیجہ آئے اور 20 میں سے 20 سیٹیں جیتیں گے۔

عمران خان نے کہا کہ میں پاکستان کے ان صحافیوں کو سلام پیش کرتا ہوں جو طاقت کے سامنے آج راہ حق کی آواز بلند کر رہے ہیں، ایاز امیر کو سلام پیش کرتا ہوں کہ بڑی دلیری سے انہوں نے حقیقت بیان کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عمران ریاض کے ساتھ جو ہوا پوری قوم نے دیکھا، ان ڈاکوؤں کا صرف ایک مقصد ہے کہ اتنا خوف پھیلا دو کہ قوم چپ کرکے ان کو تسلیم کرلے۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ تم جو سب سے اوپر بیٹھے ہو اور صحافیوں پر ظلم کر رہے ہوں سن لو۔ جو صحافی ضمیر بیچتے تھے وہ دانت نکال کر پھر رہے ہیں اور جو لوگ اس ملک کے قومی نظریے پر کھڑے ہیں، قانون کی بالادستی اور انصاف قائم کرنا چاہتے ہیں، آج ان پر کیسز اور ایف آئی آرز درج کروائی جا رہی ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ جو ان چوروں کے ساتھ کھڑا ہے، آپ کا بھی آخر میں قوم کے سامنے احتساب ہوگا اور یہ قوم کبھی معاف نہیں کرے گی۔

loading...