وسعت اللہ خان

  • جان محمد اکیلا تو نہیں ہے

    جان محمد کوئٹہ کا رہائشی ہے۔ کمپاؤنڈر ہے مگر علاقے میں اپنا کلینک چلاتا ہے۔ اس کی تین بیویاں ہیں۔ یکم جنوری کو جان محمد کے ہاں ساٹھواں بچہ پیدا ہوا۔ جان محمد اب چوتھی شادی کرنا چاہتا ہے تا کہ اولادی سنچری کا ریکارڈ قائم کر سکے۔ جان محمد کو بھی یقین ہے کہ جو دیتا ہے وہی پالتا ہے۔ [..]مزید پڑھیں

  • گونگلو اور ہمارے لال بھجکڑ

    ’’ گونگلوؤں سے مٹی جھاڑنا۔‘‘ پنجاب کے بارہ کروڑ لوگوں کو اس کا مطلب سمجھانے کی ضرورت نہیں اور بقیہ جن دس کروڑ پاکستانیوں کو اس محاورے کا پس منظر نہیں معلوم وہ ان بارہ کروڑ سے پوچھ لیں جنہیں معلوم ہے۔ ورنہ کسی بھی ریاستی عمل دار سے جان لیں جو پچھتر برس سے یہی کام کرت [..]مزید پڑھیں

  • تو پھر چار حرف ہیپی نیو ایئر پہ

    نئے برس میں کووڈ کی نئی لہر ہمالیہ سے  بلند، سمندر سے بھی گہرے اور شہد سے زیادہ میٹھے دوست چین کی جانب سے پاکستان میں داخل نہیں ہو گی۔ بلکہ سی پیک کے نقطہِ آغاز گوادر میں میٹھے پانی کی فراہمی کا مسئلہ حل ہو جائے گا اور وہاں کی مچھلیاں وہیں کے ماہی گیروں کی ملکیت تسلیم ہو جائی [..]مزید پڑھیں

loading...
  • نئے سال میں فلسطینیوں کے لیے کچھ نہیں

    باقی دنیا کے لیے نیا سال اچھا ہو گا یا برا؟ مگر ایک بات طے ہے کہ فلسطینیوں کے لیے نیا سال دو ہزار بائیس سے بھی زیادہ عذاب ناک ہوگا۔ حالانکہ جانی نقصان اور تشدد کے اعتبار سے رواں سال دو ہزار پانچ میں انتفادہ  ثانی کے بعد سے سب سے زیادہ برا سال رہا ہے۔لیکن اگلا برس شائد اس برس سے [..]مزید پڑھیں

  • بادشاہ نے بس نمک ہی تو مانگا تھا

    ایک زمانہ تھا کہ بچے کے اس بات پر کان کھینچے جاتے تھے کہ باہر سے کیا کیا الم غلم سیکھ کے آ رہا ہے۔ اس کی زبان روز بروز بازارو کیوں ہوتی جا رہی ہے۔ یہ کن لوگوں میں اٹھ بیٹھ رہا ہے۔ کیا اسے کسی نے شرافت و نجابت کے معنی نہیں سمجھائے۔ کیا اس کی تربیت میں کوئی کمی رہ گئی۔ آج لگتا ہے کہ [..]مزید پڑھیں

  • خان صاحب کا باجوہ ڈاکٹرائن

    فرشتوں سے بھی اچھا میں برا ہونے سے پہلے تھا وہ مجھ سے انتہائی خوش خفا ہونے سے پہلے تھا (انور شعور) خان صاحب کو جو خوبی دیگر سیاست گروں سے منفرد کرتی ہے وہ ہے ان کی یک رخی۔ بندہ پسند ہے تو ضرورت سے زیادہ پسند ہے اور وہی بندہ ناپسند ہے تو بے پناہ ناپسند ہے۔ خان صاحب بیک وقت بہت [..]مزید پڑھیں

  • بے بسی دیکھ میرے ہاتھ بھی اب ٹوٹ گئے

    منگل کی دوپہر جب یہ حکم پڑھ کے سنایا گیا کہ یونیورسٹیاں بھی طالبات کے لیے شجرِ ممنوعہ ہو چکی ہیں اور کل سے آپ نہیں آئیں گی تو اچانک کمرے کو چند لمحے کے لیے سانپ سونگھ گیا اور پھر سر تا پا حجاب میں لپٹی طالبات نے رونا شروع کر دیا جیسے کوئی عزیز ترین انسان آنکھوں کے سامنے دل کا د [..]مزید پڑھیں

  • جاگدے رہنا ساڈے تے نہ رہنا

    پاکستان اس وقت دو طرفہ بقائی حملے کی زد میں ہے۔ پہلا حملہ معیشت نے کر رکھا ہے۔ ریاستی خزانے میں اس وقت اتنا زرِمبادلہ ( چھ اعشاریہ سات ارب ڈالر ) موجود ہے جس سے صرف چار ہفتے کی درآمدات کی ادائیگی ہو سکے۔ مگر یہ ادائیگی بھی یوں مشکل تر ہوتی جا رہی ہے کہ لگ بھگ دو سو چالیس روپے فی [..]مزید پڑھیں

  • غصہ قابو میں رکھنا بھی چینیوں سے سیکھ لیں

    جس طرح شوگر کوئی مرض نہیں مگر اسے ام المرائض کہا جاتا ہے۔ اسے بروقت نہ سنبھالا جائے تو رفتہ رفتہ گردہ، دل، بینائی اور دیگر اعضاِ رئیسہ و خبیثہ ناکارہ ہوتے چلے جاتے ہیں اور انسان موت کے قریب ہوتا چلا جاتا ہے۔ بیعنہی غصہ کوئی نفسیاتی بیماری نہیں بلکہ ناپسندیدگی کی انتہائی شکل پ [..]مزید پڑھیں

  • آٹھ برس بعد بھی معاملات جوں کے توں

      گزشتہ روز (سولہ دسمبر) سانحہ آرمی پبلک اسکول پشاور کو آٹھ برس مکمل ہو گئے۔ خود کش دھماکوں کو چھوڑ کے آج تک دہشت گردی کی اتنی خونریز منظم کارروائی کبھی نہیں ہوئی جس میں ایک ہی جھٹکے میں ایک سو بتیس بچوں سمیت ڈیڑھ سو انسان بلاقصور موت کے گھاٹ اتار دیے گئے ہوں۔ تب بھی وفاق می [..]مزید پڑھیں