افضال ریحان

  • سپریم کورٹ کی خلاف آئین رائے کیوں؟

    قانون کا مسلمہ اصول ہے کہ کسی آئینی شق میں اگر ابہام ہو تو اس کی تشریح سپریم جوڈیشری کرے گی۔ واضح آئینی حکم یا ہدایت کو مروڑنے یا تبدیل کرنے کا حق سوائے پارلیمنٹ کے کسی کو بھی حاصل نہیں۔ مگر افسوس کہ یہاں اسی جمہوریہ پاکستان کی سپریم جوڈیشری میں آئین کی تشریح کے نام پر کون ک [..]مزید پڑھیں

  • پارلیمانی جمہوریت اور فلور کراسنگ کی شق

    جمہوریت اور آمریت محض دو سسٹم نہیں ہیں، یہ اقدار کے دو مختلف تہذیبی و فکری دھارے یا زاویے ہیں۔ آگے چل کر جن کے مختلف النوع تقاضے ہیں۔ مثال کے طور پر ایک شخص خود کو جمہوری الذہن کہتا ہے لیکن اس کے عمومی سیاسی رویے میں جبر کا عنصر نمایاں ہے یا وہ اختلاف رائے کو پسند نہیں کرتا ی [..]مزید پڑھیں

  • اکیسویں صدی کا نواب سراج الدولہ ؟

    درویش کی تمنا ہوتی ہے کہ جو لوگ حکومت سے نکالے جا چکے ہیں ان کا محاکمہ کرتے رہنے کی بجائے ایک پھیرا اس نئی عبوری شہباز حکومت پر بھی آئے۔ لیکن کیا کریں جناح ثانی یا کرکٹر صاحب اس کا موقع ہی نہیں آنے دے رہے۔ روز کوئی نہ کوئی نیا شگوفہ یا پھل جھڑی چھوڑ دیتا ہے کہ بندہ کیا کرے۔ نہ [..]مزید پڑھیں

loading...
  • اختلاف رائے کے ساتھ جینا سیکھیں

    مسلمانوں میں جتنا زور وحدت، یگانگت، اتفاق و اتحاد اور باہمی بھائی چارے پر دیا جاتا ہے، افسوسناک حقیقت یہ ہے کہ ہم میں اتنی ہی تناسب سے نااتفاقی، نفاق، انتشار، منافرت، فرقہ پرستی اور باہمی سرپٹھول زیادہ ہے۔ ہر سچیار اپنے آپ کو اعلیٰ اور دوسروں کو ادنیٰ و کمتر خیال کرتا ہے۔ ج [..]مزید پڑھیں

  • حرم نبوی کے تقدس کی پائمالی کیوں؟

    انسانیت صدیوں ٹھوکریں کھانے اور جدوجہد کرنے کے بعد کچھ حقائق تک پہنچتی ہے تو جہلا بجائے ان کا ادراک کرنے یا سمجھنے کے الٹا مذاق اڑانا شروع کردیتے ہیں۔ اپنے مذموم سیاسی مقاصد کے لیے مذہب کا استعمال آج کوئی نئی چیز نہیں ہے اقتدار کے حریص صدیوں اس ہتھیار کا استعمال بے دردی سے کرت [..]مزید پڑھیں

  • وزیرخارجہ بلاول بھٹو سے توقعات؟

    ان دنوں میاں شہباز شریف کا وزیر اعظم بننا اور بلاول بھٹو کا وزیر خارجہ بننا پاکستان کیلئے نیک نامی کا باعث اس لئے ہے کہ عالمی افق پر شہباز شریف کا تعارف اپنے بڑے بھائی اور پاکستان کے مقبول ترین لیڈر میاں نواز شریف کے ساتھ جڑا ہوا ہے۔ جن کا ملکی سیاست میں یہ ریکارڈ ہے کہ وہ تین ن [..]مزید پڑھیں

  • کرکٹر صاحب! تشدد کی دھمکیاں بند کریں

    میدان سیاست میں کامیابی کیلیے مختلف النوع سیاسی چالیں چلنا قابل فہم ہے لیکن اپنا سیاسی الو سیدھا کرنے کیلیے دھونس دھاندلی، کمینگی، بدزبانی، بدتہذیبی، منافرت، جھوٹے پروپیگنڈے کی بھرمار، گھٹیا الزامات کی بوچھاڑ سے بھی پچاس قدم آگے بڑھ کر اپنے جنونیوں کو مار دھاڑ، پکڑ دھکڑ او [..]مزید پڑھیں

  • تمہاری زلف میں پہنچی تو حسن کہلائی

    کرکٹ کے ایک سابق کھلاڑی نے کہا ہے کہ میر جعفر نے بھٹو کو پھانسی دی ۔ یہاں سوال پیدا ہوتا ہے کہ میر جعفر وہ کس کو کہنا چاہ رہا ہے ؟ ایک قتل کیس میں بھٹو کو پھانسی کی سزا تو سپریم جوڈیشری نے سنائی تھی اور اس پر عملد رآ مد جنرل ضیا الحق نے کیا تھا ۔ بھٹو کی پارٹی گزشتہ چار دہائیوں سے [..]مزید پڑھیں

  • اتنی نہ بڑہا پاکئی داماں کی حکایت....

    ہماری روائتی سوسائٹی میں جوجتنے زیادہ پارسائی و دیانتداری کے دعوے کرتا ہے، موقع ملنے پر وہی شخص سب سے زیادہ کرپٹ، بددیانت، دھوکے باز، جھوٹا، مکار، فراڈیا اور بات بے بات یوٹرن لینے والا ثابت ہوتا ہے۔ اسے اپنی عزت کا کوئی پاس ہوتا ہے اور نہ اپنے کہے کا کوئی لحاظ ’ منہ میں رام [..]مزید پڑھیں

  • کیا آپ باضابطہ مارشل لاء لگوانا چاہتے ہیں؟

    خان عبدالولی خان نے ایک مرتبہ کہا تھا کہ دنیا میں حکومتیں آتی اور جاتی ہیں مگر ہمارے ہاں عجب دستور ہے جو کرسی پر براجمان ہو جاتا ہے پھر وہ اسے چھوڑنا نہیں چاہتا۔ وہ اس کے ساتھ ایسے چپک جاتا ہے جیسے یہ اس کے وجود کا حصہ ہو۔ ولی خاں صاحب کا اشارہ ایک نام نہاد جمہوری لیڈر کی طرف ت [..]مزید پڑھیں